عدالتی فیصلے پر نظرثانی کی درخواست پرمحفوظ فیصلہ سنا دیا

العزیزیہ ریفرنس ،نوازشریف کی نظرثانی کی درخواست مسترد ، ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

اسلام آباد( آن لائن)اسلام آبادہائیکورٹ نے العزیزیہ ریفرنس میں نواز شریف کے سرنڈر کرنے کے عدالتی فیصلے پر نظرثانی کی درخواست پرمحفوظ فیصلہ سنا دیا،عدالت نے نوازشریف کی نظرثانی کی درخواست مسترد کردی اور ان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے۔عدالت نے نوازشریف کو گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم دیدیا۔ نجی ٹی وی جی این این کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں العزیزیہ سٹیل ملز ریفرنس میںنوازشریف کے سرنڈر کرنے کے فیصلے پر نظرثانی درخواست پر سماعت ہوئی ، جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اخترکیانی پر مشتمل ڈویژن بنچ نے سماعت کی ۔ عدالت نے کہاکہ ابھی تو ہم نے طے کرنا ہے کیا نواز شریف کی درخواست سنی بھی جا سکتی ہے یانہیں ؟،نیب نے کہاکہ ضمانت منسوخی کی درخواست احتیاطی اقدامات کے طور پر دائر نہیں کی ،عدالت نے کہاکہ اگر نوازشریف کی درخواستیں قابل سماعت قراردیں تواس کو سنیں گے ، پہلے نوازشریف کی حاضری سے استثنا کی درخواست پر سماعت کرتے ہیں ، ابھی نواز شریف کی متفرق درخواستوں پر سماعت کی بات کررہے ہیں ۔ نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے دوران سماعت مختلف عدالتی فیصلوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ نوازشریف کو بغیر سنے دوسری عدالت نے اشتہاری قرار دے دیا،نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے پرویز مشرف کیس کابھی حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ انعام الرحیم نے مشرف کے اثاثوں کی چھان بین کی درخواست دی ،پرویز مشرف کے وکیل کو پیش ہونے کی اجازت دی گئی، غیر معمولی حالات میں وکیل کو پیش ہونے کی اجازت دی جا سکتی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.